کشمیر: عبایا پہننے پر استانی برطرف

بھارت کے زیرِ انتظام کشمیر کے دہلی پبلک سکول میں طلبا و طالبات نے جمعہ کو کلاسز کا بائیکاٹ کیا اور اسکول احاطے میں انتظامیہ کے خلاف دھرنا دیا۔ طلبہ ایک استانی کو عبایا پہننے پر ملازمت سے برطرف کیے جانے پر احتجاج کر رہے تھے۔ دہلی پبلک سکول پورے ہندوستان میں معیاری سکولوں کا ایک نیٹ ورک ہے۔ وادی میں اس کی کئی شاخیں ہیں۔

dehli public school

ڈی پی ایس سکول میں تنازعہ جمعرات کو اُسوقت کھڑا ہوا جب اسکول کی پرنسپل نے استانی سے کہا کہ کلاس میں عبایا پہن کر نہیں جائیں اور انہیں نوکری یا عبایا میں سے کسی ایک کا انتخاب کرنا ہوگا۔ اس پر استانی سکول چھوڑ کر چلی گئیں۔‘

طلبا میں پرنسپل کے برتاو پر کافی غم و غصہ پایا جاتا ہے۔ پرنسپل نے دھرنے پر بیٹھے طلبا کو قائل کرنا چاہا تو انہیں کئی مشکل سوالات کا سامنا کرنا پڑا

اسکول میں دو روز سے درس و تدریس کا عمل روکا ہوا ہے۔ والدین اور اساتذہ کے درمیان میٹنگ بھی ملتوی کردی گئی ہے۔

پانچ سال قبل بھی اس سکول میں جمعہ کی نماز کو لے کر ہنگامہ ہوا تھا۔ اسکول انتظامیہ نے جمعہ کو آدھے دن کے بعد چھٹی کو نہیں تسلیم کیا تو جمعہ کے روز طلبا نے اسکول کے گراؤنڈ میں باجماعت نماز کی جس پر انتظامیہ نے اعتراض کیا۔ طلبا نے مشتعل ہو کر اسکول میں توڑ پھوڑ کیجس کے باقی سکولوں کی طرح ڈی پی ایس میں بھی جمعہ کے روز دوپہر کے بعد چھٹی ہونے لگی۔

x

Check Also

ہرسال 1600 بھارتی فوجی بغیر جنگ کیے مرجاتے ہیں

ہرسال 1600 بھارتی فوجی بغیر جنگ کیے مرجاتے ہیں

ٹریفک حادثات،خودکشیاں اور بیماریاں بھارتی فوجی اہلکاروں کی بڑی تعداد میں ہلاکتوں کا سبب بننے ...