چین پنجاب سی پیک نامنظور، اے این پی

قومی اسمبلی اجلاس میں سی پیک منصوبے پر اراکین اسمبلی نے اپنے خیالات کا اظہار کیا ۔

پیپلز پارٹی کے رہنماوں نفیسہ شاہ اور نوید قمر کا کہنا تھا کہ سی پیک منصوبہ کمرشل قرض پر بنایا جا رہا ہے۔ اس پر ایک فیصد سیکیورٹی سرچاج نہیں لیا جا سکتا ۔

شازیہ مری نے کہا کہ گردشی قرضے بھی صارفین سے وصول کیے جا رہے ہیں ۔ حکومت بتائے کہ اس ضمن میں صارفین پر کتنا بوجھ پڑے گا ۔

عابد شیر نے جواب میں کہا کہ نیلم جہلم سرچارج گزشتہ حکومتوں نے لگا یا  اور منصوبوں کے تمام اخراجات کا ایک فیصد سیکورٹی سرچارج منصوبے کا حصہ ہوتا ۔حکومت نیا سرچارج نہیں لگا رہی۔آئی پی پیز کے کنٹریکٹ میں بھی یہ سرچارج شامل ہے ۔

اے این پی کے غلام احمد بلور نے سی پیک منصوبہ پر واک آوٹ کیا اور اسے پاک چین نہیں بلکہ پنجاب اور چین کا منصوبہ قرار دیا ۔

اجلاس میں پی ٹی آئی کے محمد علی نےکشمیر کمیٹی کے چیئرمین مولانا فضل الرحمان کے بیان پر سخت تنقید کی جس میں مولانا فضل الرحمان نے کہا تھا کہ فاٹا میں مقبوضہ کشمیر سے زیادہ ظلم ہو رہا ہے ۔

پی ٹی آئی کے رکن نے مزید کہا کہ مولانا فضل الرحمان کے بیان نے آپریشن ضرب عضب کو متنازعہ بنانے کے ساتھ آئین پاکستان کو بھی انگریز کا آئین کہا۔

قومی اسمبلی کا اجلاس جمعہ کی صبح 10 بجے تک ملتوی کر دیا  گیا۔

 

x

Check Also

امریکا، ڈرون سے گردے کی اسپتال میں ڈیلیوری

ڈرون سے گردے کی اسپتال میں ڈیلیوری

امریکی شہربالٹی مورمیں ڈرون کی مدد سے ڈونر کا گردہ مریض تک پہنچا دیا گیا، ...

کتاب میں کسی کھلاڑی کی کردار کشی نہیں کی، آفریدی

کتاب میں کسی کھلاڑی کی کردار کشی نہیں کی، آفریدی

قومی کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان شاہد آفریدی نے کہا ہے کہ انہوں نے اپنی ...

ماریا شراپوا اٹالین ٹینس سے دستبردار

ماریا شراپوا اٹالین ٹینس سے دستبردار

ٹینس پلیئر ماریا شراپووا کے فینز کیلئے بری خبر ، وہ اب تک کاندھے کی ...

%d bloggers like this: