ایک خط اومران کے نام

محسن نواز

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

اومران بیٹا!

تمہاری پتھرائی ہوئی آنکھیں دیکھ کر بہت صدمہ ہوا ، اس سے پہلے تمہارا ایک ہم وطن  بھائی ایلان بھی اٹلی کے ساحل پر دم توڑ کر بہت سوں کو رلا گیا تھا لیکن یہ لوگ نہیں سمجھتے کہ عظیم مقاصد کے لیے لڑی جانے والی جنگ میں یہ سب تو برداشت کرنا پڑتا ہے ۔

بشار الاسد نے اپنے وطن شام کی سالمیت کا تحفظ کرنے کی قسم اٹھائی ہے ،اب وہ یہ گننے تو نہیں بیٹھ سکتا کہ وطن کی خاطر کتنے ایلان اپنی جان سے گئے اور کتنے اومران پتھر کے ہو گئے ۔ Migrant boat accident in Turkey

ایران کے لیے لازم  ہے کہ مشرق وسطیٰ میں اس کا اہم ساتھی اپنے تخت پر برقرار رہے ، اب چاہے کوئی ایلان ساحل پر دم توڑ دے یا کوئی اومران دھماکے سن کر حواس کھو بیٹھے ۔

روس خطے میں اپنے اکلوتے حلیف کو کیسے کھو جانے دے ، فضائی حملوں میں ناگزیر نقصان ( Collateral damage ) تو ہوتا ہی ہے نا ، اومران تمھیں ابھی اس بات کی سمجھ نہیں ۔

اب عالمی سپر پاور ہونے کے ناطے امریکا کے اپنے مفادات ہیں ، ان مفادات کی بھینٹ چاہے کوئی اومران چڑھے یا ایلان ، عظیم مقاصد کے حصول کے لیے اتنا کچھ تو جائز ہے ۔

سعودی عرب خطے میں ایران کا اثر و نفوذ کیسے برداشت کرے ، شام میں خانہ جنگی کرانا اس کی مجبوری ہے ، باغیوں کو پیسہ اور اسلحہ نہیں دے گا تو علاقے کا چودھری کیسے کہلائے گا ؟

شام کے باغی اپنی آزادی کی جنگ سے کیسے پیچھے ہٹ جائیں ، لڑائی ہو گی تو پھر لوگ تو مریں گے لیکن علوی حکومت کو تو ہٹانا ہے نا ۔ ایک اور شامی بچے نے دنیا کو ہلا کر رکھ دیا تو میرے ننھے سے اومران ، یہ مت سمجھنا کہ تمہاری دلوں کو ہلا  دینے والی تصویر دیکھ کر یہ سب اپنی جنگ بند کر دیں گے ، ان کے مقاصد کسی اومران یا ایلان کی جان سے کہیں بڑھ کر ہیں ۔ ایلان تو مر گیا ، اب یہ سب اس انتظار میں ہیں کہ تم بڑے ہو اور پھر ان میں سے کسی ایک کے ساتھ مل کر مقدس جنگ کا حصہ بن جاؤ ۔

…………………………………………………………………………….

تعارف: محسن نواز خان سینئر صحافی ہیں۔ ملتان میں اخبارات میں اہم ترین عہدوں پر کام کرنے کے بعد انہوں  نے الیکٹرانک میڈیا  میں قدم رکھا۔ دنیا نیوز اور 92 نیوز کے بعد ان دنوں وہ نیونیوز سے  وابستہ ہیں۔

x

Check Also

امریکا، ڈرون سے گردے کی اسپتال میں ڈیلیوری

ڈرون سے گردے کی اسپتال میں ڈیلیوری

امریکی شہربالٹی مورمیں ڈرون کی مدد سے ڈونر کا گردہ مریض تک پہنچا دیا گیا، ...

کتاب میں کسی کھلاڑی کی کردار کشی نہیں کی، آفریدی

کتاب میں کسی کھلاڑی کی کردار کشی نہیں کی، آفریدی

قومی کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان شاہد آفریدی نے کہا ہے کہ انہوں نے اپنی ...

ماریا شراپوا اٹالین ٹینس سے دستبردار

ماریا شراپوا اٹالین ٹینس سے دستبردار

ٹینس پلیئر ماریا شراپووا کے فینز کیلئے بری خبر ، وہ اب تک کاندھے کی ...

%d bloggers like this: