پاکستان نے ڈرون کا مسئلہ عالمی فورم پر اٹھا دیا

اقوام متحدہ کی ہیومن رائٹس کونسل میں پاکستان کی نمائندہ تہمینہ جنجوعہ نے ڈرون حملوں کا مسئلہ اٹھا دیا ہے اور اسے پاکستان کی خودمختاری اور عالمی قوانین اور یواین چارٹر کے خلاف قرار دیا ہے۔drone attack

پاکستان میں ڈرون حملوں میں مارے جانے والے شہریوں کے لیے قانونی جنگ لڑنے والے وکیل شہزاد اکبر  کا کہنا ہے کہ’’ایک غیرملکی دہشت گرد   جسکے  سر کی قیمت بھی لگی ہوئی تھی، حکومت اس کو لے کر اقوامِ متحدہ کے فورم پر پہنچ گئی اور جو 300 کے قریب پاکستانی ان حملوں میں ہلاک ہوئے ہیں، اُن کی کوئی فکر نہیں۔ جب ایک دہشت گرد کے مرنے پر عالمی  اداروں میں جائیں گے تو آپ کے موقف کی کون اخلاقی حمایت کرے گا۔ اگر حکومت اِس حوالے سے کوئی موثر کام کرنا چاہتی ہے تو اِس کو اقوامِ متحدہ کی سکیورٹی کونسل میں اٹھائے۔

دفاعی تجزیہ نگاربریگیڈیئر ریٹائرڈ شوکت قادر کے خیال میں ڈرون کے حوالے سے ہمارا نکتہ نظر تبدیل ہوتا جا رہا ہے۔

جماعت اسلامی کے سابق امیر منور حسن کا موءقف ہے کہ حکومت قوم کو اِس مسئلے پر اعتماد میں لے۔

x

Check Also

دھرنوں کا باب بند کرنا ہوگا، چودھری نثار

دھرنوں کا باب بند کرنا ہوگا، چودھری نثار

سابق وزیرداخلہ چودھری نثارعلی خان نے کہا ہے کہ پاکستان کو بنانا ری پبلک بنانے ...